وظائف اور معاونت

”سی آئی آئی ٹی کی جانب سے اب تک جن ضرورت مند/مستحد طلبہ کی تمام قسم کی فیس معاف کی گئی تھی، اُسے فوراً ختم کردیا گیا ہے۔“

توجہ:کامسیٹس انسٹی ٹیوٹ آف انفارمیشن ٹیکنالوجی نے مندرجہ ذیل پروگرام کی توثیق کی ہے اور سی آئی آئی ٹی کے ضرورت مند /مستحق طلبہ کے لیے ”مالی امداد کا پروگرام FSP“ کی سہولت فراہم کی ہے۔ یہ پروگرام سی آئی آئی ٹی کے طلبہ کی مختلف کیٹیگریوں کو مالی امداد اور وظائف کی صورت میں مالی امداد دے گا۔ سی آئی آئی ٹی اپنے مستحق طلبہ کا نہ صرف خصوصی خیال رکھتا ہے بلکہ انھیں تعلیم کا خصوصی موقع بھی فراہم کرتا ہے نیز طلبہ کے مالی مسائل پر توجہ دیتا او ران کے حل کے لیے ایک اہم کردار انجام دیتا ہے تاکہ طلبہ کو حصول تعلیم کی راہ میں کسی رکاوٹ کا سامنا نہ کرنا پڑے۔

طلبہ کے لیے سی آئی آئی ٹی کی مالی امداد

سی آئی آئی ٹی مالی امداد کا پروگرام (FSPs)

کامسیٹس انسٹی ٹیوٹ آف انفارمیشن ٹیکنالوجی تعلیمی فنڈ کے ذریعے ضرورت مند طلبہ کو مالی امداد دینے کو یقینی بناتا ہے۔ یہ مالی امداد سی آئی آئی ٹی اور اس کے ملازمین کا ماہانہ چندے سے دی جاتی ہے۔ مذکورہ امداد اُن تمام طلبہ کو دی جاتی ہے جو نسل، مذہب، رنگ، قومی شناخت، عمر، جنس یا معذوری کا لحاظ رکھے بغیر صرف ضرورت مند طلبہ ہوتے ہیں۔ مالیاتی امداد کے پروگراموں کو صرف سی آئی آئی ٹیتعلیمی فنڈ کے ذریعے سرمایہ فراہم کیا جاتا ہے۔

سی آئی آئی ٹی کے مالی امداد کے پروگرام پر مندرجہ ذیل اسکیموں کے ذریعے عمل در آمد کیا جاتا ہے۔

۔1 ضروریات پر مبنی مالی امداد کا پروگرام (NBFSP)

(a) مالی امداد کا پروگرام

سی آئی آئی ٹی نے ”غریب“ طلبہ کو اپنی تعلیم جاری رکھنے کے لیے امداد دینے کا عزم کر رکھا ہے۔ کئی ایسے طلبہ ہیں جو سی آئی آئی ٹی کی فیس ادا کرنے کے قابل نہیں کیونکہ اُن کا مالی پس منظر بہت غریب ہے۔ اس لیے یہ فیصلہ کیا گیا کہ مالی امداد ایسے طلبہ کو دینی چاہیے جو غربت کی وجہ سے اپنی تعلیم جاری نہیں رکھ سکتے۔ مالی امداد کی حد اور مقدار کا تعین مالی امداد کے پروگرام کی کمیٹی کرتی ہے جس میں طلبہ کی ضروریات کو مد نظر رکھا جاتا ہے۔ توقع یہ ہے کہ جن طلبہ کو سی آئی آئی ٹی کی مالی امداد دی جاتی ہے، وہ بہتر تعلیمی کارکردگی کا مظاہرہ کریں گے۔ اپنی کلاسوں میں باقاعدہ حاضری دیں گے او راچھے رویے کے حامل طلبہ ثابت ہوں گے۔

(b) قرضہ حسنہ

طلبہ کی ایک اور ایسی قسم ہے جو ”ضرورت مند“ کہلاتی ہے۔ ایسے طلبہ کو قرضہ حسنہ (بلا سود) دیا جاتا ہے۔ طلبہ کو پہلا سمسٹر مکمل کرنے اور اچھی کارکردگی دکھانے، گذشتہ سمسٹر میں 80فیصد حاضری اور اُن کے خلاف کوئی بھی انضباطی کیس /اقدام نہ ہونے کی صورت میں یہ قرضہ حسنہ دیا جاتا ہے۔ قرضہ حسنہ کے لیے گارنٹی کا دینا ضروری ہوتا ہے۔

سی آئی آئی ٹی رعایتی پروگرام (CPP)

خونی رشتہ دار/اولاد کے لیے

جب دو یا اس سے زائد بچے سی آئی آئی ٹی کے مستقل طلبہ ہوتے ہیں تو اُن کے والدین کو ان تمام بچوں کی فیس ادا کرنا پڑتی ہے۔ والدین کے اس بوجھ کو کم کرنے کے لیے ان بچوں کو مالی امداد دی جاتی ہے۔ ایک بچے کی 50فیصد فیس معافی کے سابقہ عمل کی بجائے کمیٹی مالی امداد کا تعین کرتی ہے لیکن تمام بچوں کے لیے یہ فی سمسٹر 8000روپے سے زائد نہیں ہوگی۔ یہ مالی امداد بچوں کو اس شرط پر ادا کی جاتی ہے کہ اُن کے والدین ان کی فیس ادا کرسکیں اور طلبہ اچھی تعلیمی کارکردگی کا مظاہرہ کریں۔

نوٹ: ایک وقت میں صرف ایک مالی امداد کی درخواست پر غور کیا جائے گا۔

طبی سہولیات:ناگہانی صورت حال سے نمٹنے کے لیے CiiTنے اپنے تمام کیمپوں میں طبی سہولیات کا اہتمام کر رکھا ہے۔ اس ضمن میں 2007میں اسلام آباد سی آئی آئی ٹی میں ایک میڈیکل سنٹر قائم کیا گیا تھا۔ جس میں زندگی بچانے کی ادویات کے ساتھ ساتھ دیگر ادویات بھی سی آئی آئی ٹی کے طلبہ اور ملازمین کو مفت فراہم کی جاتی ہیں۔ اس طبی مرکز میں تین ڈاکٹرز، دوسٹاف نرس اور دو نرسنگ اسسٹنٹ کام کررہے ہیں ان فراہم کردہ خدمات میں طبی مشورے، ابتدائی طبی امداد، سانس بحال کرنے کا نظام (Nebulization) بلڈ شوگر کا فوری ٹیسٹ، ECG، زخموں پر مرحم پٹی اور ٹانکے لگانا، ناک سے خون بہنے یا شدید زخموں کی صورت میں ان کا علاج، صدمے یا ذہنی دباؤی کی صورت میں مریضوں کی طبیعت کی بحالی، مشاورت/ نفسیاتی علاج معالجہ، ایمبولنس سروس، معمولی سرجری، معائنے کے لیے مردوں اور خواتین کے الگ الگ بستر شامل ہیں۔

سی آئی آئی ٹی کے اس طبی مرکز میں مختلف قسم کی ایمرجنسی/ہنگامی صورت سے نمٹا جات ہے جس میں معمولی نوعیت کی ایمرجنسی/ہنگامی حالت، بے ہوشی/ دورے پڑنا، SOBسانس کا رُک جانا، RTAپیشاب کی خرابی اور بندش، سینے درد اور تکلیف (ہسپتال پہنچنے سے قبل ابتدائی طبی امداد کی فراہمی) پانی کی کمی/ قے اور الرجی وغیرہ شامل ہیں۔ اس میڈیکل سنٹر میں ہنگامی حالت سے نمٹنے کے لیے ضروری ادویات کا سٹاک موجود ہوتا ہے جو مختلف حلقے سی آئی آئی ٹی کو عطیہ کے طو رپر دیتے ہیں۔

ٹرانسپورٹ:طلبہ کو مخصوص روٹس پر ٹرانسپورٹ کی سہولت فراہم کی جاتی ہے۔ 64سیٹوں پر مشتمل 13بسیں، 29سیٹوں والی ایک کوسٹر اور 16سیٹوں والی 4ہائی ایس ویگن یہ خدمات انجام دیتی ہیں۔ یونیورسٹی اپنے طلبہ کو سفری سہولیات فراہم کرنے کے لیے نجی شعبے سے بھی بسیں کرائے پر لیتی ہے اس کیمپس تک پہنچنے کے لیے اسلام آباد اور راولپنڈی کی جانب سے پبلک ٹرانسپورٹ کے ذریعے بھی آیا جاسکتا ہے۔

ویب سائٹ کے لئے یہاں کلک کریں

ہماری بارے ميں

CIIT تین براعظموں میں 21 رکن ممالک کے ساتھ ایک بین سرکاری تنظیم ہے جو جنوب ( COMSATS ) ، میں پائیدار ترقی کے لئے سائنس اور ٹیکنالوجی پر کمیشن کے ایک پروجیکٹ کے طور پر ، 1998 ء میں قائم کیا گیا تھا...

مزید پڑھیں

کیمپس

ہم تک پہنچنے

پارک روڈ ، ترلایئ کلاں ، اسلام آباد 45550 ، پاکستان

ہم سے رابطہ کریں

ٹیلی فون: +92-51-9247000-9247002 اور 9049802
یواےاین : + 92-51-111-001-007

ہمیں فالو کریں

     

کیمپس کا نقشہ

© 2008 - 2015 کومستس انسٹی ٹیوٹ آف انفارمیشن ٹیکنالوجی
ITCenter اسلام آباد